ٹیکسیشنفنانس
تازہ ترین

ٹیکس ریفامز کمیشن نے بڑی مالیت کے انعامی بانڈز پر پابندی کا مطالبہ کردیا

اسحاق ڈار بڑی رقوم کے انعامی بانڈز کے ذریعے کالے دھن کا پینڈورا بکس کھولنے کے حق میں نہیں تھے، ٹی آر سی رکن

کراچی: ٹیکس ریفارمز کمیشن (ٹی آر سی) نے بڑی رقوم کے انعامی بانڈز پر پابندی کا مطالبہ کردیا ہے۔ حکومت کو ان انعامی بانڈز کے متبادل رجسٹرڈ بانڈز جاری کرنے کی استدعا کی گئی ہے۔ ٹیکس اصلاحات کمیشن کے ایک رکن اس مطالبے کیوضاحت کرتے ہوئے کہا ہے کہ بڑی قدر کے انعامی بانڈز مبینہ ٹیکس چوری اور فنانشل کرپشن کا ذریعہ بن رہے ہیں۔

ٹیکس ریفارمز کمیشن کے رکن نے اپنا نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ مسلم لیگ نواز کے دور میں 40 ہزار روپے کے انعامی بانڈز قومی شناختی کارڈ کی شرط کے ساتھ جاری کئے گئے لیکن ان کی تعداد محدود تھی جبکہ غیر رجسٹرڈ بانڈزکی تعداد بہت زیادہ ہے جو معیشت میں کالے دھن کے ذمرے میں آتی ہے۔

واضع رہے کہ ٹیکس ریفارمز کمیشن کا قیام سابق دور حکومت میں ہوا۔اس کمیشن کی رپورٹ میں بڑی رقوم یعنی 40 ہزار اور 25 ہزار کے انعامی بانڈز پر پابندی لگانے کی تجویز شامل تھی اور متعدد بار سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار کی توجہ مبزول کروائی گئی لیکن انہوں نے ہر بار اس تجویز کو مسترد کیا۔ ٹی آر سی رکن کا کہنا تھا کہ اسحاق ڈار بڑی رقوم کے انعامی بانڈز کے ذریعے دبے کالے دھن کا پینڈورا بکس کھولنے کے حق میں نہیں تھے۔

ٹیکس ریفارمز کمیشن کے رکن نے کہا ہے کہ کرپشن پر قدغن لگانے کے منشور کتساتھ اقتدار میں آنےوالی پاکستان تحریک انصاف کی حکومت خصوصا” وزیر اعظم عمران خان اور وزیر خزانہ اسد عمر کو کالے دھن کو بڑا ذریعہ بننے والے بڑی رقوم 40 اور 25 ہزارکے انعامی بانڈز پر فوری پابندی لگانے سے ساتھ رجسڑڈ انعامی بانڈز متعارف کرانے چاہیے تاکہ فنانشل ٹاسک فورس کی سفارشات کی روشنی میں پاکستان کے اقدامات دنیا کے سامنے آسکیں۔

دوسری جانب ان غیر رجسٹرڈ بڑی رقوم کے انعامی بانڈز مالکان کی مانیٹرنگ سے کروڑوں نہیں اربوں روپے ظاہر ہونگے جو محصولات میں اضافے کا سبب بنیں گے۔

ٹیگس

Zubair Yaqoob

The author has diversified experience in business reporting. He is senior editor at www.pkrevenue.com. He can be reached at [email protected]

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

error: Alert: Content is protected !!
Close