ٹریڈ اینڈ انڈسٹریٹیکسیشنفنانس
تازہ ترین

حکومت نے نظر ثانی شدہ بجٹ کی تیاری مکمل کرلی، ٹیکس چوروں اور امراء پر بجلی گرے گی

سابق حکومت کا آخری بجٹ ناقابل عمل قرار، 9 ماہ کے لیئے بجٹ میں نئی تجاویز مرتب کرلی گئیں

کراچی: وفاقی حکومت نے نظر ثانی شدہ بجٹ کی تیاری مکمل کرلی ہے، آئیندہ 9 ماہ ( یعنی 3 سہ ماہیوں) کے لئے اہداف کا تعین کیا جارہا ہے۔ معتبر ذرائع کا کہنا ہے کہ موجودہ حکومت نظر ثانی شدہ بجٹ میں ملک کے مستقبل کی درست سمت طے کرنا چاہتی ہے۔ ذرائع نے کہا ہے کہ معاشی ماہرین سے ملنے والی کئی تجاویز کو ضمنی بجٹ کا حصہ بنایا جارہا ہے۔

نظر ثانی شدہ بجٹ میں ملک بھر کے عوام کی مشکلات کو مد نظر رکھا گیا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ماضی کی حکومتوں نے عوام پر سیاسی مفادات کو ترجیح دی جس کے نتیجے میں چند افراد کو بڑے مالی فوائد حاصل ہوئے لیکن عوام مہنگائی کے بوجھ تلے براہ راست دب گئے۔

نظر ثانی شدہ بجٹ میں حکومت نے ذیل تجاویز پر غور کیا ہے۔
# ڈالر کے مقابلے میں روپے کے پیمانے کوکسی عدد پر مستحکم کیا جائے

# 19۔2018 کے 9 ماہ کے لیئے محصولات کے اہداف بڑھائے جائیں گے جو 4000 ارب سے کہیں زیادہ ہوسکتے ہیں۔ اس مقصد کے لئے ایف بی آر کو مشکل ٹاسک دے دیا گیا ہے

# جی ڈی پی پر ٹیکس کی شرح کو 5 سال کے لئے مقرر کیا جا سکتا ہے

# برآمدات، درآمدات، مبادلہ ذخائر، ترسیلات، براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری، اور تجارتی خسارے میں کمی کے لئے ضمنی بجٹ میں اہم تجاویز شامل کی جارہی ہیں

# نظر ثانی شدہ بجٹ میں ماضی میں مراعات یافتہ طبقے کو دیئے جانے والی ٹیکس چھوٹ کی واپس لینے کی تجویز زیر غور ہے۔ جس پر آئیندہ چند روز میں فیصلہ کرتے ہوئے دستاویز میں شامل کیا جائے گا۔

# آئی ایم ایف یا کسی آپشن سے قبل ضمنی بجٹ میں ایسے اقدامات کئے جارہے ہیں تاکہ کسی بھی ادارے یا ملک کے ساتھ ان کی شرائط پر مزاکرات کئے جاسکیں

# آٹھ سو سے ایک ہزار پر تعیش درآمدی اشیاء پر ریگیولیٹری ڈیوٹی میں نمایاں اضافے کی تجویز بھی شامل کی گئی ہے

# درآمدی اشیاء کی لاگت میں کمی کے لئے ان کے اجزاء پر رعایت اور دیگر سہولیات کی تجویز بھی ضمنی بجٹ کے لئے زیر غور ہے

# براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری کے لیئے کاروباری کشش بڑھانے کی تجویز اور اس پر عملدرآمد کے لئے مختلف آپشنز بھی ضمنی بجٹ میں شامل کئے جانے کا امکان ظاہر کیا جارہا ہے

# فارن ایکسچینج ٹرانسفر کے لیئے انکم ٹیکس اور ایکٹیو ٹیکس پیئر اور ان کے تمام کوائف ایف بی آر کو شیئر کرنے کی شرط بھی تجاویز میں زیر غور ہے

# حوالہ، ہنڈی کے کاروبار کی حوصلہ شکنی کے لئے بین القوامی قوانین کے تحت رقوم کی منتقلی کی تجویز بھی دی گئی ہے۔ اس حوالے سے کرنسی ایکس کمپنیوں کو ٹیکس اور یگر ہدایات بھی نظر ثانی شدہ بجٹ میں شامل کی جاسکتی ہیں جس پر عملدر آمد سے مبادلہ ذخائر میں خاطر خواہ اضافہ ممکن ہوگا۔

# سمندر پار پاکستانیوں کی سرمایہ کاری ترغیب کے لیئے گھروں، صنعتی، زرعی، صحت، ٹرانسپورٹ وغیرہ کی اسکیمیں متعارف کرانے اور ان پر بہتر منافعے کے ساتھ سرمایہ کاری کی سیکیورٹی کی تجویز بھی ضمنی بجٹ کے لئے زیر غور ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ وفاقی حکومت آئی ایم ایف کے ساتھ شرائط کے دباؤ کے بغیر مزاکرات کرنا چاہتی ہے لیکن کسے بھی ادارے سے قرض کے حصول سے قبل ملک کی معاشی سمت کا تعین کرنے کے لئے نظر ثانی شدہ بجٹ کی صورت میں پیشگی اقدامات کئے جارہے ہیں تاکہ قرض کی رقوم کو اہداف کے لئے فوری استعمال کیا جاسکے۔

ٹیگس

Zubair Yaqoob

The author has diversified experience in business reporting. He is senior editor at www.pkrevenue.com. He can be reached at [email protected]

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

error: Alert: Content is protected !!
Close