ٹریڈ اینڈ انڈسٹریسیکٹورل
تازہ ترین

گیس ٹیرف 46 فیصد تک بڑھانے کی افواہیں دم توڑ گئیں

حکومت ٹیرف بڑھانے کے حق میں نہیں، وفاق/اپٹما ذرائع۔ وزیر اعظم اسٹیک ہولڈرز کے مفاد میں فیصلے کریں، جاوید بلانی

کراچی: وفاقی ذرائع کا کہنا ہے کہ حکومت ابتدائی مراحل میں گیس ٹیرف بڑھانے کے حق میں نہیں ہے۔ ایسا کیا گیا تو اسٹیک ہولڈرز میں بے چینی پیدا ہوگی۔ ادھر وزارت پیٹرولیم و قدرتی ذخائر کے حکام کا بھی کہنا ہے کہ گیس کی قیمت میں اضافے کا تاحال فیصلہ نہیں کیا گیا نہ ہی حکومت کی جانب سے گیس ٹیرف بڑھانے کا گرین سگنل ملا ہے۔

حالیہ دنوں میں وفاق کی جانب سے گی کی قیمتیں بڑھانے کے حوالے سے متعدد خبریں گردش کررہی تھیں لیکن وفاق نے اس سلسلے کوئی فیصلہ نہیں کیا۔ وفاقی ذرائع نےکہا ہے کہ گیس کمپنیوں کے نقصانات کے حوالے سے نیپرا اور اوگرا نے اقتصادی رابطہ کونسل کو بعض تجاویز پیش کی تھیں جن میں ٹیرف بڑھانے کی تجویز بھی شامل تھی جس پر وزیر اعظم عمران خان نے تمام اسٹیک ہولڈرز سے مشاروت کے احکامات جاری کئے تھے۔
آل پاکستان ٹیکسٹائل ملز ایسوسی ایشن اپٹما کے مطابق گیس کے ٹیرف میں اضافے کا نوٹی فکیشن جاری نہیں ہوا، اپٹما ترجمان کا کہنا ہے کہ ماضی کی حکومتوں کے برعکس وزیر اعظم عمران خان اس مسئلے کا دیرپا حل چاہتے ہیں۔
اپٹما کے ترجمان کا کہنا تھا کہ نیپرا اور اوگرا کی گیس ٹیرف میں 46 فیصد اضافے کی تجویز کسی صورت قابل عمل نہیں۔

ممتاز صنعتکار اور تاجر رہنما جاوید بلوانی نے گیس ٹیرف میں اضافے کی تجویز پر رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ماضی میں بیورو کریسی کی ہر تجویز حکم مان کر عوام اور صنعتوں پر مسلط کی جاتی رہی ہیں جس کے نتائج بحران کی صورت میں سامنے آئے ہیں۔

جاوید بلوانی نے وزیر اعظم عمران خان اور وزیر خزانہ اسد عمر سے استدعا کی ہے کہ ملک کے معاشی بحران اور غریب عوام کی مشکلات کے پیش نظر ایسا فیصلہ کریں جو تمام اسٹیک ہولڈرز کے لئے قابل قبول

ٹیگس

Zubair Yaqoob

The author has diversified experience in business reporting. He is senior editor at www.pkrevenue.com. He can be reached at [email protected]

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

error: Alert: Content is protected !!
Close