منی اینڈ بینکنگ
تازہ ترین

مقامی بینک پر ہیکرز کا حملہ، اسٹیٹ بینک کی تمام کمرشل بینکوں کو نظام اپ گریڈ کرنے کی تنبیح

ہیکرز کے حملے کے بعد مقامی بینک نے آن لائن نظام، کریڈٹ کارڈ اور اے ٹی ایمز سروس معطل کردی

کراچی: پاکستان میں گذشتہ روز ایک بینک کے پے منٹ کارڈز کی سیکورٹی کی خلاف ورزی اور مختلف ممالک کے اے ٹی ایمز اور پی او ایس جیسے فراہمی کے مختلف ذرائع پر ان کے غیر قانونی استعمال کو مدنظر رکھتے ہوئے بینک نے اپنے کارڈز کے بیرون ملک لین دین میں استعمال پر عارضی طور پر پابندی عائد کر دی ہے۔

اسٹیٹ بینک نے مزکورہ بینک کو ہدایت کی ہے کہ وہ اس خامی کی نشاندہی کر کے اسے فوری طور پر دور کرے۔متاثرہ بینک کو یہ ہدایت بھی کی گئی ہے کہ وہ صارفین کے لیے احتیاطی تدابیر کے حوالے سے ایڈوائزری جاری کرے۔ اسٹیٹ بینک نے تمام بینکوں کو یہ ہدایات بھی جاری کی ہیں کہ وہ ملک میں تمام پے منٹ کارڈز کی سیکورٹی یقینی بنانے کے لیے انتظامات کریں اور کارڈز کے استعمال خاص طور پر بیرون ملک لین دین کی ریئل ٹائم نگرانی کی جائے۔

اسٹیٹ بینک بینکوں کے مطابق کا جائزہ لیتا رہے گا اور اور ضرورت پڑنے پر مزید اقدامات کیے جائیں گے۔ پاکستان میں تمام بینکوں کو درج ذیل امور یقینی بنانے کے لیے ہدایات جاری کی گئی ہیں۔

بینکوں کو ہدایات جاری کی گئی ہیں کہ:
تمام آئی ٹی نظاموں بشمول کارڈ آپریشنز سے منسلک نظاموں کی سیکورٹی کے اقدامات اور انہیں مستقل اپڈیٹ کیا جائے تاکہ مستقبل کے چیلنجوں سے نمٹا جا سکے۔

کارڈ آپریشنز سے متعلق نظاموں اور لین دین کی چوبیس گھنٹے بروقت نگرانی یقینی بنانے کے لیے وسائل مختص کیے جائیں۔

تمام پے منٹ اسکیموں، سوئچ آپریٹرز اور میڈیا سروس پروائیڈرز کے ساتھ فوری تعاون کیا جائے جن کے ساتھ بینک منسلک ہیں تا کہ مشتبہ لین دین میں کسی بھی قسم کی مجرمانہ سرگرمی کی نشاندہی کی جا سکے۔

بینکوں کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ غیر معمولی واقعات کی صورت میں انہیں فوری طور پر اسٹیٹ بینک کو رپورٹ کریں

ٹیگس

Zubair Yaqoob

The author has diversified experience in business reporting. He is senior editor at www.pkrevenue.com. He can be reached at [email protected]

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

error: Alert: Content is protected !!
Close