سیکٹورلفنانس
تازہ ترین

آئیندہ چند ماہ کے دوران مہنگائی کی شرح ” دو ہندسوں ” میں جانے کا خدشہ

وزرات خزانہ کی پرائز مانیٹرنگ کمیٹی کے اجلاس میں موجودہ اور مستقبل قریب میں مہنگائی کی شرح میں اضافے کر تشویش کا اظہار

اسلام آباد: ورثے میں ملے بدترین معاشی بحران سے نبرد آزما موجودہ حکومت کو آئیندہ چند ماہ میں مہنگائی کے طوفان کا سامنا ہونے کا خدشہ وزارت خزانہ کی پرائز مانیٹرنگ کمیٹی کے اہم اجلاس میں ظاہر کردیا گیا ہے۔

ستمبر میں کنزیومر پرائز انڈیکس 5.6 ہوگئی جو گزشتہ سال اسی عرصے میں 3.39 رہی۔ گزشتہ ماہ مہنگائی کی شرح 8 فیصد ریکارڈ کی گئی جو گزشتہ سال اسی عرصے میں 5.4 فیصد رہے۔ وزارت خزانہ کی پرائز مانیٹرنگ کمیٹی نے رواں ماہ میں 53 اشیاۓ ضروریہ کی قیمتوں میں 3.65 فیصد اضافے پر تشویش ظاہر کرتے ہوئے صوبوں کو ہدایات جاری کی ہیں کہ مہنگائی کی شرح میں اضافے کے پیش نظر اشیائے ضروریہ کو قیمتوں کی برقرار رکھنے اور ان کی بروقت فراہمی یقینی بنائی جائے۔

اجلاس میں خام تیل کی قیمت 90 ڈالر کو چھونے سے درآمدی بل کا بوجھ بڑھنے کے نتیجے میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں مزید اضافے سے اشیائے ضروریہ کی قیمتوں پر ممکنہ اثرات پربھی غور کیا گیا۔

معاشی ماہرین نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ بحرانی صورتحال سے نکلنے کے لئے قرض کے حصول کے نتیجے میں شرح سود میں اضافہ، روپے کی قدر میں مزید کمی اور مہنگائی کی شرح ” دو ہندسوں” میں جاسکتی ہے جس کے براہ راست اور منفی اثرات عام آدمی کی زندگی پر نمایاں ہونگے۔

ٹیگس

Zubair Yaqoob

The author has diversified experience in business reporting. He is senior editor at www.pkrevenue.com. He can be reached at [email protected]

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

error: Alert: Content is protected !!
Close