سیکٹورلفنانس
تازہ ترین

موجودہ حکومت نے سابقہ دور کے تمام ترجیحی فنڈز روک دیئے

رواں مالی سال کے دوران تاحال صرف 34ارب کے فنڈز جاری کئے گئے ہیں

اسلام آباد: حکومت کی تبدیلی کے ساتھ ہی ترقیاتی فنڈز کی ترجیحات بھی تبدیل ہونے کا امکان ظاہر کیا جارہا ہے۔ نئی حکومت نے سابقہ حکومت کے ترجیحی انفراسٹرکچر کے شعبے کے فنڈز روک دئیے ہیں۔

جاری کردہ رپورٹ کے مطابق رواں مالی سال کے دوران تاحال صرف 34ارب کے فنڈز جاری کئے گئے ہیں۔ رواں مالی سال کے دوران تاحال موٹرویز اور شاہراہوں کیلئے رقوم مختص نہی کی گئیں ہیں، سابق حکومت نے بجٹ میں مالی سال کیلئے 201ارب روپے کے فنڈز مختص کئے تھے۔ اس شعبے میں فنڈز کے التوا سے سی پیک کے متعدد منصوبے تعطل کا شکار ہونے کا امکان ظاہر کیا جارہا ہے۔

رپورٹ کے مطابق بجلی کے منصوبوں کیلئے مختص 36ارب روپے کے ترقیاتی فںڈز بھی رکے ہوئے ہیں۔ فاٹا دس سالہ پلان، سی پیک کے خصوصی فنڈ اور ایس ڈی پیز کیلئے بھی فنڈ جاری نہ ہوسکے ہیں۔ وفاق اور صوبوں کے مشترکہ منصوبوں کیلئے بھی فنڈز التواء کے شکار ہوگئے ہیں۔

ڈیموں کی تعمیر کیلئے دو ماہ کے دوران محض ڈیڑھ کروڑ روپے کے فنڈز ہی جاری ہو سکے ہیں۔ رواں مالی سال کے دوران تاحال صرف 34ارب کے فنڈز جاری ہوئے ہیں۔

ٹیگس

Zubair Yaqoob

The author has diversified experience in business reporting. He is senior editor at www.pkrevenue.com. He can be reached at [email protected]

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

error: Alert: Content is protected !!
Close