ٹیکسیشنفنانس

قومی بچت اسکیم کے منافع پر نان فائلر کو 17.5 فیصد ودھ ہولڈنگ ٹیکس ادا کرنا ہونگے

کراچی: قومی بچت اسکیموں سے منافع حاصل کرنے والے افراد جو کہ ایکٹیو ٹیکس پیئر لسٹ ( آے ٹی ایل) دوسرے معنوں میں ٹیکس دہدگان کی فہرست میں شامل نہیں، انہیں 17.5 فیصد ودھ ہولڈنگ ٹیکس ادا کرنا ہوگا

 

وفاقی محولات کے ادارے ایف بی آر کی جانب سے جاری کردہ ودھ ہولڈنگ ٹیکس کارڈ برائے سال 2018.19 کے مطابق نان فائلرز یا ایسے افراد جو ایکٹیو ٹیکس پیئر لسٹ میں شامل نہیں، قومی بچت اسکیموں کے منافع سے ان افراد کو 17.5 فیصد ودھ ہولڈنگ ٹیکس کٹوتی کے بعد رقوم جاری ہونگی۔

 

انکم ٹیکس آرڈیننس 2001 کے سیکشن 151 اے کے مطابق قومی بچت اسکیمز یا پوسٹ آفس بچت اسمیکوں سے منافع حاصل کرنے والے افراد سے ودھ ہولڈنغ ٹیکس کی کٹوتی کی جائے گی۔ یہ رقوم ملکی خزانے میں جمع ہوگی۔

 

نئے ٹیکس کارڈ کی تفصیلات کے مطابق قومی بچت کی اسکیموں سے منافع حصال کرنے والے ( ٹیکس ریٹرن فائلر کی صورت میں ) ان پر 10 فیصد ٹیکس واجب الادا ہوگا۔

 

قومی بچت اسکیموں سے منافع 5 لاکھ تک ہونے کی صورت میں نان فائلر کو 10 فیصد ودھ ہولڈنگ ٹیکس کی کٹوتی ہوگی۔  نان فائلر کو ودھ ہولڈنگ ٹیکس کی کٹوتی کی زیادہ سے زیادہ شرح 17.5 فیصد تک ہوگی۔

 

ایف بی آر کے ٹیکس کارڈ کے مطابق ودھ ہولڈنگ ٹیکس حتمی ہونگے ماسوائے ٹیکس پیئر ایک کمپنی ہو یا ٹیکس کی کٹوتی انکم ٹیکس آرڈیننس کے سیکشن 7 بی کے تحت کی گئی ہو۔

ٹیگس

Zubair Yaqoob

The author has diversified experience in business reporting. He is senior editor at www.pkrevenue.com. He can be reached at [email protected]

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

error: Alert: Content is protected !!
Close