فنانس

تجارتی خسارہ 16 فیصد کمی کے ساتھ کے ساتھ 3 ارب 19 کروڑ ڈالر تک پہنچ گیا

کراچی: روپے کی قدر میں کمی اور ریگیولیٹری ڈیوٹیز کے اقدامات کے باوجود بڑھتے تجارتی خسارے پر قابو پایا نہ جاسکا۔ رواں مالی سال کے پہلے ماہ (جولائی) میں برآمدات میں اضافے کا رجحان تھم گیا۔ جون کے مقابلے میں جولائی 2018 میں برآمدات میں 13 فیصد اور درآمدات میں 15 فیصد کمی ریکارڈ کی گئی۔

 

 ادارہ شماریات کے اعداد و شمار کے مطابق تجارتی خسارہ 16 فیصد کی ریکارڈ کمی کے ساتھ 3 ارب 19 کروڑ ڈالر تک پہنچ گیا ہے۔ ادارہ  شماریات کے مطابق گزشتہ سال جولائی کی نسبت رواں سال جولائی میں تجارتی خسارے میں اعشاریہ اکیس فیصد اضافہ ہوا ہے۔ سالانہ بنیادوں پر جولائی میں برآمدات میں صرف 1.17 فیصد اور درآمدات میں 0.60 فیصد اضافہ دیکھا گیا ہے۔

 

سالانہ بنیادوں پر جولائی میں ڈالر کی قدر 105 روپے سے بڑھ کر 124 روپے ہوگئی۔ اس طرح پاکستانی کرنسی ڈالر کے مقابلے میں 19 روپے گر گئی ہے۔ ایشیاء میں رواں سال پاکستانی روپیہ بد ترین گراوٹ کا شکار رہا ہے۔

ٹیگس

Zubair Yaqoob

The author has diversified experience in business reporting. He is senior editor at www.pkrevenue.com. He can be reached at [email protected]

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

error: Alert: Content is protected !!
Close