سیکٹورل
تازہ ترین

مہنگائی کی شرح پانچ اعشاریہ آٹھ فیصد ہوگئی

معاشی ماہرین نے دسمبر 2018 تک شرح سود 8.5 فیصد ہونے کا خدشہ ظاہر کیا ہے

کراچی : رواں مالی سال کے دوسرے ماہ اگست میں مہنگائی کی شرح چار سال کی بلند سطح پر پہنچ گئی، مہنگائی میں اضافے کے اعشاریئے 5.8 فیصد ظاہر کررہے ہیں۔

اگست 2018 میں افراط زر کی شرح چار سال کی بلند سطح پر پہنچ گئی ہے جبکہ ادھر اسٹیٹ بینک نے بھی مہنگائی مقررہ ہدف سے تجاوز کرنے کا امکان ظاہر کیا ہے۔

ادارہ شماریات کے اعداد وشمار کے مطابق اگست میں مہنگائی میں اضافے کی شرح 5.8 فیصد رہی ہے۔ واضع رہے کہ مالی سال 19۔2018 کے لئے حکومت نے افراط زر کا ہدف چھ فیصد مقرر کیا ہے۔

اگست کے دوران بنیادی افراط زر کی شرح سات اعشاریہ سات فیصد رہی جو کہ تین سال دس ماہ کی بلند ترین سطح ہے، خوردنی اشیاء میں مہنگائی کی شرح 3.3 فیصد رہی۔

معاشی ماہرین نے دسمبر 2018 تک شرح سود 8.5 فیصد ہونے کا خدشہ ظاہر کیا ہے۔

ٹیگس

Zubair Yaqoob

The author has diversified experience in business reporting. He is senior editor at www.pkrevenue.com. He can be reached at [email protected]

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

error: Alert: Content is protected !!
Close