اسٹاک اینڈ کوموڈیٹیز
تازہ ترین

پاکستان اسٹاک ایکس چینج نے کمپنی لسٹنگ قوانین میں ترمیم کیلئے اسٹیک ہولڈرز سے تجاویز طلب کرلیں

لسٹنگ کیلیے سی آئی بی رپورٹ کی شرط کے خاتمے، ڈی لسٹنگ درخواست پر شیئر ویلیوایشن کی مدت تین ماہ کرنے کی تجویز

کراچی: پاکستان اسٹاک ایکس چینج کے بورڈ آف ڈائریکٹرز نے کمپنیز کی لسٹنگ کے لئے اسٹیٹ بینک کے کریڈٹ انفارمیشن بیورو ( سی آئی بی) رپورٹ کی تصدیق کی شرط کے خاتمے کیلئے ایکس چینج کے قوانین میں ترمیم کے لئے اسٹیک ہولڈرز سے 5 ستمبر تک تجاویز طلب کرلی ہیں۔

پاکستان اسٹاک ایکس چینج کے موجودہ قوانین کے تحت لسٹنگ کے لئے نا صرف کمپنی بلکہ اس کے چیف ایگزیکٹیو، ڈائریکڑز، اسپانسرز، شیئر ہولڈرز، پرموٹرز پر کریڈٹ انفارمیشن بیورو (سی آئی بی) رپورٹ کی شرط لازمی قرار دی گئی ہے۔

پاکستان اسٹاک ایکس چینج کے بورڈآف ڈائریکٹرز نے تجویز دی ہے کہ پی ایس ایکس کی سی آئی بی رپورٹ تک رسائی نا ہونے کی بڑی وجہ بینکنگ کمپنیز آرڈیننس 1962 کے تحت اسٹیٹ بینک آف پاکستان کی جانب سے انتہائی ناگزیر صورت میں جاری کی جاتی ہے لہزا پی ای ایکس بورڈ نے اس شرط کے خاتمے کی تجاویز طلب کرلی ہیں۔

پاکستان اسٹاک ایکس چینج کے بورڈآف ڈائریکٹرز نے کمپنی کی ڈی لسٹنگ کے لیئے دی جانے والی درخواست پر حصص کی قدر کے تعین کی مدت 6 ماہ سے کم کرکے 3 ماہ کرنے کی تجویز دی ہے۔ پی ایس ایکس بورڈ کے مطابق اسٹاک ایکس چینج میں متواتر اتار چڑھاؤ کے سبب حصص کی قدر کے بہتر انداز میں تعین کے لیئے 3 ماہ کی مدت موزوں ہوگی۔

ٹیگس

Zubair Yaqoob

The author has diversified experience in business reporting. He is senior editor at www.pkrevenue.com. He can be reached at [email protected]

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

error: Alert: Content is protected !!
Close